سیکورٹی فورسز پر دہشت گروں کی فائرنگ

سیکورٹی فورسز پر دہشت گروں کی فائرنگ

دہشتگردوں نے پنجگورکے علاقے کاہان ویلی میں سیکیورٹی فورسزکے قافلے پرفائرنگ کی ہے جس سے 3 جوان شہید اور 8 زخمی ہو گئے ہیں

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگردوں کی فائرنگ سے3جوان شہید،5زخمی ہوئے ہیں، زخمی اہلکاروں کی حالت تشویشناک ہے، زخمیوں کوسی ایم ایچ کوئٹہ منتقل کردیاگیا،زخمیوں میں ایک آفیسربھی شامل ہے

واضح رہے کہ بلوچستان میں دہشت گردی کا یہ پہلا واقعہ نہیں، بی ایل ایف دہشت گردانہ حملے کرتی رہتی ہے، بی ایل ایف کے پیچھے انڈیا کا ہاتھ ہے

دو ماہ قبل ماہ مئی میں بلوچستان میں آپریشنز کے دوران 7جوان شہید ہوگئے،دہشتگردوں نے ایف سی کی گاڑی کو آئی ای ڈی سے نشانہ بنایا،دہشتگردی کے واقعات مچھ اور کیچ کے علاقے میں پیش آئے،بلوچستان میں دہشتگردی کے 2 واقعات میں 7 جوان شہید ہوئے

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق مچھ میں گزشتہ رات ایف سی کی گاڑی پرآئی ای ڈی سےحملہ کیاگیا جس کے نتیجے میں نائب صوبیدار سمیت چھ اہلکار شہید اور چھ زخمی ہوئے، دھماکہ بولان کے علاقے پیر غائب میں ہوا،ایک دوسرے واقعہ میں کیچ میں ایران سے ملحقہ علاقے مند میں چوکی پر فائرنگ سے سپاہی امداد علی شہید ہوئے۔ ‎

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق شہدا میں نائب صوبے دار احسان اللہ خان، نائیک زبیر خان اور نائیک اعجاز احمد شامل ہیں،نائیک مولا بخش ، نائیک نور محمد اور ڈرائیور عبدالجبار بھی شہدا میں شامل ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں