اہم خبر: مشکوک لائنسسز والے مزید پائلٹس معطل

اہم خبر: مشکوک لائنسسز والے مزید پائلٹس معطل

اسلام آباد:مشکوک لائنسس والے مزید 15 پائلٹس معطل ، مجموعی تعداد 93 ہوگئی،اطلاعات کے مطابق پائلٹس کے مشتبہ لائسنسز کی تصدیق کا عمل جاری اور ایوی ایشن ڈویژن نے مزید 15 پائلٹس کو معطل کردیا جس کے بعد معطل ہونے والے پائلٹس کی مجموعی تعداد 93 ہوگئی۔

ذرائع کے مطابق یہ 15 اُن 262 پائلٹس میں شامل تھے جن کے لائسنسز مشکوک تھے جبکہ 28 کے لائسنس پہلے ہی معطل کیے جاچکے ہیں۔ترجمان ایوی ایشن ڈویژن، سینئر جوائنٹ سیکریٹری عبدالستار کھوکھر نے کہا کہ حکومت کی ہدایات پر بورڈ آف انکوائری نے 262 پائلٹس کے لائسنسز مشکوک ہونے کی نشاندہی کی تھی جس کے بعد انہیں فوری طور پر گراؤنڈ کردیا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ یہ 28 پائلٹس پرواز سرانجام نہیں دے سکیں گے اور ان کے لائسنسز مکمل قانونی عمل کے تحت منسوخ کیے گئے ہیں جس میں پائلٹس کو اپنی صفائی کا موقع دیا گیا تھا جبکہ فیصلے سے قبل کابینہ نے 2 مرتبہ اس پر غور کیا تھا۔اس سلسلے میں 93 پائلٹس کے لائسنسز کی تصدیق کا عمل شروع کردیا گیا ہے جبکہ باقی141 کیسز کا عمل ایک ہفتے میں مکمل کرنے کی توقع ہے۔

ترجمان نے بتایا کہ وزیر ہوا بازی غلام سرور خان اسکروٹنی، تصدیق اور ضروری انضباطی کارروائی کے مکمل عمل کی بغور نگرانی کررہے ہیں۔دوسری جانب ایک نجی ایئرلائن سیرین ایئر نے ’مشکوک‘ لائسنس والے اپنے پائلٹس اور فرسٹ آفیسرز کو تنخواہوں کی ادائیگی روک دی۔

ایئرلائن کے ہیومن ریسورس ڈیپارٹمنٹ نے پائلٹس اور فرسٹ آفیسرز کو آگاہ کیا کہ جب تک لائسنس کا مسئلہ حل نہیں ہوجاتا مشتبہ پائلٹس 29 جون سے تنخواہوں سے محروم رہیں گے۔

قبل ازیں ایوی ایشن ڈویژن نے نجی ایئرلائن کو 10 پائلٹس کی فہرست فراہم کی تھی جن کے لائسنسز مشکوک ہیں، ان 10 میں 3 پہلے ہی ایئرلائن چھوڑ چکے جبکہ بقیہ کو گراؤنڈ کردیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں