نارووال اسپورٹس سٹی کیس ،احسن اقبال کیخلاف انکوائری کوانویسٹی گیشن میں تبدیل

نارووال اسپورٹس سٹی کیس ،احسن اقبال کیخلاف انکوائری

احتساب عدالت اسلام آباد میں نارووال اسپورٹس سٹی کیس کی سماعت 26 اگست تک ملتوی کر دی گئی

ن لیگی رہنما احسن اقبال کےوکیل سکندراعجازاحتساب عدالت اسلام آباد میں پیش ہوئے،نیب کی طرف سےعدالت سے ریفرنس دائر کرنے کے لیے مزیدوقت کی استدعا کی گئی، عدالت نے نیب کی استدعا قبول کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی

واضح رہے کہ احسن اقبال کو نیب نے گرفتار کیا تھا، احسن اقبال کو عدالت نے ضمانت پر رہا کیا تھاجس کے بعدوہ اڈیالہ جیل سے رہا ہوئے تھے، جیل سے رہا ہوتے ہی احسن اقبال کو نیب نے دوبارہ طلب کر کے پاسپورٹ جمع کروانے کا کہا تھا تا کہ وہ بیرون ملک فرار نہ ہو سکیں

نیب کے مطابق احسن اقبال نے بطور وزیر منصوبہ بندی اختیارات کاناجائزاستعمال کیا ،احسن اقبال نےنارووال اسپورٹس منصوبےکی لاگت کوغیرقانونی طور پر بڑھایا ،ساڑھے 3 کروڑ روپے کے منصوبے کی لاگت 10کروڑ روپے تک پہنچ گئی،لاگت بڑھانے کی اجازت سنٹرل ڈویلوپمنٹ ورکنگ پارٹی سے نہیں لی گئی

لیگی رہنما نے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے سپورٹس سٹی کمپلیکس تعمیر کرایا، جس میں 6 ارب روپے کی خورد برد کا الزام ہے۔ نیب ذرائع کے مطابق سپورٹس سٹی کمپلیکس بھارتی سرحد سے صرف 800 میٹر دور 44 ایکڑ پر تعمیر کیا گیا، جس کے لئے پی ایس ڈی پی میں خصوصی رقم رکھی گئی، منصوبے کیلئے تمام فنڈز پاکستان سپورٹس بورڈ کے ذریعے خرچ کرائے گئے، احسن اقبال نے پراجیکٹ ڈائریکٹر کی عدم تقرری سے واقف ہونے کے باوجود احکامات دیئے، سپورٹس بورڈ کی نئی انتظامیہ نے 16 اپریل کو وزارت بین الصوبائی رابطہ کی توجہ دلائی تھی، جس کے بعد چیئرمین نیب نے ڈی جی نیب کو اختر نواز گنجیرا کے بیرونی دوروں کی تحقیقات کا حکم دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں