پنجاب حکومت بے بس!! آٹے کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ، عوام حال و بے حال

پنجاب حکومت بے بس!! آٹے کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ، عوام حال و بے حال

لاہور (ویب ڈیسک) پنجاب حکومت بے بس، آٹے کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ، عوام حال و بے حال۔ پنجاب میں کھلے آٹے کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ ہونے لگا جس کے بعد فائن آٹے کی 86 کلو کی بوری 100 روپے مہنگی کردی گئی۔ پنجاب میں کھلے آٹے کی” “” “

قیمتوں میں اضافے کا مسئلہ شدت اختیار کرگیا ہے، نان روٹی ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ فلور ملیں 86 کلو فائن آٹےکی بوری 5700 کی بجائے 5800 روپے میں فروخت کررہی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ اگر یہ قیمت کم نہ ہوئی تو نان کی قیمت 15 روپے سے بھی بڑھ جائے گی۔ ادھر آٹا چکی ایسوسی ایشن نے گندم کی قیمت کو جواز بنا کر اس ہفتے پہلے 3 روپے قیمت بڑھائی تھی اور اب مزید 2 روپے قیمت بڑھانے کا اعلان کیا ہے جس کے بعد ایک کلو آٹا 70 روپے فی کلو فروخت ہوگا۔ اس ضمن میں فلور ملز ایسوسی ایشن کے رہنما عاصم رضا کا کہنا ہے کہ اوپن مارکیٹ میں گندم 2300 روپے من مل رہی ہے یہی وجہ ہے کہ آٹے کی قیمتیں بڑھانے پر مجبور ہیں۔دوسری وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیرصدارت پنجاب کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں کابینہ نے 20 کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت 850 روپے مقرر کرنے کی منظوری دی۔ سرکاری گندم کے اجراء سے مارکیٹ میں 20 کلو آٹے کا تھیلا 1050 روپے سے کم ہوکر 850 روپے پر دستیاب ہوگا جب کہ کابینہ نے فلور ملز کو قبل از وقت گندم ریلیز کرنے کی بھی منظوری دے دی ہے۔ پنجاب کابینہ نے فلور ملز کے لیے سرکاری گندم کی قیمت 1475 روپے من مقرر کی ہے اور محکمہ خوراک صرف فنکشنل فلور ملز کو سرکاری گندم کا کوٹہ دے گا۔ صوبائی کابینہ نے محکمہ خوراک سے ٹارگٹڈ سبسڈی کے لیے جامع منصوبہ بھی طلب کرلیا جب کہ محکمہ خوراک 30 روز میں اپنی حتمی سفارشات پیش کرے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں