پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت میں کتنی کمی ہوگئی؟

پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت میں کتنی کمی ہوگئی؟

لاہور (ویب ڈیسک) ملک بھر میں سونے کی قیمتوں میں تیزی سے تنزلی آنے لگی، رواں ہفتے کے چوتھے کاروباری روز کے دوران فی تولہ سونا 1 ہزار روپے سستا ہو گیا۔تفصیلات کے مطابق بین الاقوامی مارکیٹ میں فی تولہ اونس سونے کی قیمت میں دو امریکی ڈالر کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے

بعد عالمی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی نئی قیمت 1 ہزار 931 امریکی ڈالر ہو گئی ہے۔بین الاقوامی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت ہونے کے بعد ملکی صرافہ مارکیٹوں لاہور، کراچی، اسلام آباد، پشاور، کوئٹہ، حیدر آباد، سکھر سمیت دیگر جگہوں پر فی تولہ سونے کی قیمت میں ایک ہزار روپے کمی ریکارڈ کی گئی جس کے بعد تولہ سونے کی نئی قیمت ایک لاکھ 19 ہزار روپے ہو گئی ہے۔رواں ہفتے کے چار کاروباری روز کے دوران فی تولہ سونے کی قیمت میں 13 ہزار روپے کمی دیکھی گئی ہے۔ پہلے کاروباری روز کے دوران قیمت میں 3000، دوسرے کاروباری روز میں 2900، تیسرے کاروباری روز کے دوران 6100 روپے جبکہ آج چوتھے کاروباری روز کے دوران ایک ہزار روپے کمی ریکارڈ کی گئی۔فی تولہ سونے کی طرح دس گرام سونے کی قیمت میں بھی 858 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے بعد دس گرام سونے کی نئی قیمت 1 لاکھ 2 ہزار 23 روپے ہو گئی ہے۔دریں اثناء فی تولہ اور دس گرام چاندی کی قیمتوں میں استحکام رہا ہے جس کے بعد بالترتیب قیمت 1 ہزار 470 روپے ہو گئی ہے جبکہ 1 ہزار 260.28 روپے ہو گئی ہے۔دوسری جانب پاکستان سٹاک مارکیٹ میں مسلسل دوسرے روز بھی اُتار چڑھاؤ کے بعد 182.44 پوائنٹس کی مندی ریکارڈ کی گئی۔یاد رہے کہ رواں ہفتے کے پہلے کاروباری روز کے دوران سٹاک مارکیٹ میں 114.93 پوائنٹس کی مندی ریکارڈ کی گئی تھی، انڈیکس 40 ہزار کی نفسیاتی حد سے محروم ہونے کے بعد 39 ہزار 914.76 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بند ہوا تھا جبکہ سرمایہ کاروں کو 25 ارب روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑا تھا۔دوسرے کاروباری روز سٹاک ایکسچینج میں زبردست تیزی ریکارڈ کی گئی تھی اور انڈیکس 644.39 پوائنٹس کی تیزی کے بعد 40559.15 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا تھا جس کے باعث سرمایہ کاروں کو ایک کھرب روپے کے قریب فائدہ ہوا تھا۔کاروباری ہفتے کے تیسرے روز کے دوران سٹاک مارکیٹ میں 85.97 پوائنٹس کی مندی ریکارڈ کی گئی اور انڈیکس 40 ہزار 473.18 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔کاروباری ہفتے کے چوتھے روز کے دوران ٹریڈنگ کا آغاز منفی انداز میں ہوا، پہلے ہی دو گھنٹوں کے دوران انڈیکس میں 200 پوائنٹس سے زائد کی تنزلی دیکھی گئی جس کے بعد انڈیکس 40200 کی حد سے نیچے آ گیا تھا۔اُتار چڑھاؤ کے بعد پاکستان سٹاک مارکیٹ میں ایک موقع 40 ہزار کی نفسیاتی حد گر گئی تھی تاہم اس دوران تیزی بھی دیکھنے کو ملا، ٹریڈنگ کے دوران 100 انڈیکس 40564.18 پوائنٹس کی سطح پر ریکارڈ کیا گیا۔کاروبار کے اختتام پر پاکستان سٹاک مارکیٹ میں 182.44 پوائنٹس کی مندی ریکارڈ کی گئی اور انڈیکس 40290.74 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بدن ہوا جبکہ پورے کاروباری روز کے دوران کاروبار میں 0.45 فیصد کی گراوٹ دیکھی گئی، اسی دوران 34 کروڑ 21 لاکھ 32 ہزار 781 شیئرز کا لین دین ہوا۔دن بھر ٹریڈنگ کے دوران سرمایہ کاروں کو 40 ارب روپے سے زائد کا نقصان برداشت کرنا پڑا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں