ڈیل آف دی سینچری کی ایسی کی تیسی۔۔۔!! متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین معاہدے پر ترکی بھی میدان میں آگیا، اردگان کا بڑا اعلان

ڈیل آف دی سینچری کی ایسی کی تیسی۔۔۔!! متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین معاہدے پر ترکی بھی میدان میں آگیا، اردگان کا بڑا اعلان

انقرہ (ویب ڈیسک) نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین معاہدے پر ترکی بھی میدان میں آ گیا۔ ترکی نے متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان معاہدے کی مذمت کی ہے۔ ترک صدارتی ترجمان نے کہا ہے کہ تاریخ یواے ای کو معاہدے پر کبھی معاف نہیں کرے گی،

تاریخ فلسطینی عوام کے ساتھ دھوکہ کرنے والوں کو شکستہ حال دیکھے گی ، تاریخ فلسطینی قوم اور ان کی جدوجہد کو دھوکہ دینے والوں کو ضرور یاد رکھے گی۔ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان سفارتی تعلقات غیر قانونی اور خطرناک ہیں۔ واضح رہے کہ خطے میں قیام امن کیلئے اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے مابین ڈیل ہو گئی۔ اطلاعات کے مطابق خطے میں اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان کی ڈیل کا سپشل اعلان کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس ڈیل کا تذکرہ کرتے ہوئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا ہے کہ سرائل اور متحدہ عرب امارات نے تعلقات معمول پر لانے پر اتفاق کیا ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ ، اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو اور ابوظہبی ولی عہد شہزادہ محمد بن زاید نے ایک مشترکہ بیان کدیا ہے کہ انھیں امید ہے کہ “تاریخی پیشرفت مشرق وسطی میں امن کو آگے بڑھے گی”۔ اس کے نتیجے میں ، انہوں نے مزید کہا ، اسرائیل مقبوضہ مغربی کنارے کے بڑے حصوں کو منسلک کرنے کے اپنے منصوبوں کو معطل کردے گا۔ اب تک اسرائیل کے خلیجی عرب ممالک کے ساتھ سفارتی تعلقات نہیں ہیں ،تاہم ، ایران کے علاقائی اثر و رسوخ پر مشترکہ خدشات کے نتیجے میں ان کے مابین غیر سر کاری رابطے ہوئے ہیں۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان معمول کے تعلقات استوار کرنے کے لیے طے شدہ معاہدہ درست سمت کی جانب ایک بڑا قدم ہے۔ انھوں نے یہ بات وسطی یورپ کے دورے میں اپنے ہم راہ سفر کرنے والے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی ہے۔وہ جمعرات کو سلوینیا سے آسٹریا کے دارالحکومت ویانا پہنچے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں