کسی بھول میں مت رہنا۔۔!! وارنٹ گرفتاری اور اشتہاری قرار دینے کا اقدام، لندن میں بیٹھے نوازشریف نے جوابی کارروائی ڈال دی

کسی بھول میں مت رہنا۔۔!! وارنٹ گرفتاری اور اشتہاری قرار دینے کا اقدام، لندن میں بیٹھے نوازشریف نے جوابی کارروائی ڈال دی

لندن (ویب ڈیسک) سابق وزیراعظم نواز شریف نے توشہ خانہ ریفرنس میں اپنے وارنٹ گرفتاری اور اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کو چیلنج کر دیا۔ مسلم لیگ ن کے قائد نے بیرسٹر جہانگیر جدون کے ذریعے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کیا۔ نواز شریف کی جانب سے دائر درخواست میں کہا گیا ہے

کہ توشہ خانہ ریفرنس میں احتساب عدالت کی کارروائی اور اشتہار جاری کرنےکا حکم نامہ کالعدم قرار دیا جائے۔ درخواست میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ نیب اپوزیشن کو ٹارگٹ کر کے آواز دبانا چاہتا ہے، نواز شریف مفرور نہیں بلکہ ضمانت پر بیرون ملک ہے۔ نواز شریف کا کہنا ہے بیرون ملک علاج جاری ہے، نمائندے کے ذریعے ٹرائل کا سامنا کرنے کی اجازت دی جائے۔ سابق وزیراعظم نے درخواست میں یہ بھی کہا کہ یورپی یونین اور ہیومن رائٹس واچ نے بھی نیب کی کاروائیوں پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔ خیال رہے کہ توشہ خانہ ریفرنس میں احتساب عدالت نے 11 جون کو نواز شریف کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے۔ 7 جولائی کو نواز شریف کی احتساب عدالت میں طلبی کے لیے کارروائی کا آغاز ہوا اور پھر 13 جولائی کو جاتی امرا میں نواز شریف کی رہائشگاہ کے باہر طلبی کا نوٹس چسپاں کیا گیا۔ نواز شریف نے احتساب عدالت کا حکم نامہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا، نواز شریف نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں کہا کہ احتساب عدالت کی کاروائی، اشتہار جاری کرنے کا حکم نامہ کالعدم قرار دیا جائے،بیرون ملک علاج جاری ہے، نمائندے کے ذریعے ٹرائل سامنا کرنے کی اجازت دی جائے، قبل ازیں ‏توشہ خانہ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی طلبی کا اشتہارجاری کر دیا گیا,نوازشریف کی طلبی کا اشتہارعوامی مقامات پرچسپاں کردیاگیا. احتساب عدالت کا کہنا ہے کہ نوازشریف جان بوجھ کرعدالتی کارروائی سے مفرور ہیں،‎‏نوازشریف کواشتہاری قراردینےکی کارروائی شروع کردی۔ توشہ خانہ ریفرنس میں نوازشریف کوجواب کیلئے 17 اگست تک آخری موقع دیا گیا ہے،توشہ خانہ ریفرنس میں سابق صدر آصف زرداری کے وارنٹ گرفتاری نیب کوارسال کر دیئے گئے،‏آصف زرداری کے 50 ہزارمچلکوں کیساتھ قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کئے گئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں