بریکنگ نیوز: مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کو بڑی خوشخبری مل گئی، لیگی کارکنان نے بھنگڑے ڈالنا شروع کر دیئے

بریکنگ نیوز: مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کو بڑی خوشخبری مل گئی، لیگی کارکنان نے بھنگڑے ڈالنا شروع کر دیئے

لاہور (ویب ڈیسک) نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نوازکی نیب آفس پیشی کے وقت ہنگامہ آرائی کا معاملہ، کیپٹن (ر) صفدر عبوری ضمانت کیلئے عدالت پہنچ گئے۔ عدالت نے کیپٹن (ر) صفدرکی عبوری ضمانت 4 ستمبر تک منظور کر لی، ڈیوٹی ایڈیشنل سیشن جج نور احمد

بسمل نے کیس پر سماعت کی، عدالت نے پولیس کو نوٹس جاری کرتے ہوئے مقدمے کا ریکارڈ طلب کر لیا۔ کیپٹن ر صفدر کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ نیب آفس کے باہر ہنگامہ آرائی سے کوئی تعلق نہیں، عدالت نے ضمانت منظور کر لی اور پولیس سے ریکارڈ طلب کر لیا۔ کیپٹن ر صفدر کا کہنا تھا کہ ضمانت ہمارا حق ہے ،ہم قانون کے پابند ہیں ،یہ پاکستان کی تاریخ کا انوکھا ترین کیس ہے ،وزیراعظم پلاننگ ،شہزاد اکبر معاونت کر رہے ہیں۔ مریم نواز کی نیب پیشی کے موقع پر ن لیگی کارکنان کی جانب سے نیب دفتر پر حملے کے واقعہ کیخلاف نیب کی درخواست پر تھانہ چوہنگ میں مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز سمیت دیگر شخصیات،اراکین اسمبلی اور کارکنوں کیخلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ مقدمے میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی جن دیگر شخصیات کو نامزد کیا گیا ہے ان میں رانا ثناء اللہ، محمد زبیر، جاوید لطیف، بلال یاسین سمیت دیگر شامل ہیں،مسلم لیگ (ن) کیخلاف مقدمہ میں 353، 427، 148 اور 16 ایم پی او کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔ درخواست کے متن میں کہا گیا تھا کہ مریم صفدر کی قیادت میں کارکنوں نے اہلکاروں پر پتھراؤ کیا۔ مریم نواز نے اپنے شوہر صفدر اعوان کی ایما پر نیب پر حملہ کرایا۔ لیگی کارکنوں کے پتھراؤ سے نیب ملازمین سمیت 13 اہلکار زخمی ہوئے۔ قبل ازیں گزشتہ روز لاہور کی سیشن عدالت نے کیپٹن (ر) صفدر کی نیب سمیت دیگر کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر پولیس کو قانون کے مطابق کارروائی کا حکم دیا تھا،ایڈیشنل سیشن جج اعجز احمد گوندل نے کیپٹن (ر) صفدر کی وزیر اعظم عمران خان اور چیئرمین نیب سمیت دیگر کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر سماعت کی۔ عدالت نے پولیس کو حکم دیا کہ درخواست گزار کو سن کر قانون کے مطابق کاررواٸی کی جاٸے۔ کیپٹن صفدر کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ حکومت اداروں کو استعمال کر رہی ہے، پراسیکیوشن ٹیم بھی بناٸی گٸی، اس کیس میں حکومت کی اتنی توجہ ہے کہ ایس پی خود عدالت میں پہنچے ہیں۔فرہاد علی شاہ نے اپنے دلائل میں مزید کہا کہ پولیس کی طرف سے پیش کی گٸی رپورٹ بھی جھوٹی ہے۔ بلٹ پروف گاڑی کا شیشہ پتھر سے نہیں ٹوٹ سکتا، مریم نواز پر حملہ کیا گیا۔ پولیس آرڈر کے مطابق پولیس کی انویسٹی گیشن اور آپریشن ونگ علیحدہ ہے۔ ایس ایچ او کو کیسے پتا چل گیا کہ یہ درخواست غلط ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں