لیجنڈ بھارتی اداکار دلیپ کمار نے سائرہ بانو کو شادی کی پیشکش کس انداز میں کی تھی ؟ سائرہ بانو نے پاکستانی صحافی ارشاد بھٹی کو کیا بتایا ؟ ایک دلچسپ تحریر

لیجنڈ بھارتی اداکار دلیپ کمار نے سائرہ بانو کو شادی کی پیشکش کس انداز میں کی تھی ؟ سائرہ بانو نے پاکستانی صحافی ارشاد بھٹی کو کیا بتایا ؟ ایک دلچسپ تحریر

لاہور (ویب ڈیسک) سائیں بزدار کی زیادہ تر باتیں تو آپ پچھلے کالم میں پڑھ چکے ، کچھ رہ گئی تھیں ، سوچا یہ بھی آپ تک پہنچادوں، پنجاب ہاؤس اسلام آباد میں یہ پونے دوگھنٹے کی بیٹھک تھی،چند ماہ پہلے عثمان بزدار سے پہلی ملاقات بھی یہیں ہوئی۔پنجاب ہاؤس میں برے وقت کے

اچھے دوست اپنے میجر عامر بھی یادآئے،نامور کالم نگار ارشاد بھٹی اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔ اکثر چوہدری نثار سے یہیں ملتے،یہیں ایک ملاقات میں چوہدری صاحب نے میجر صاحب کو راضی کیا کہ نواز شریف کو سمجھائیں ،میجر صاحب نے میاں صاحب کو آدھا قرآن سنا دیامگرمیاں صاحب تھے کہ ٹس سے مس نہ ہوئے، سمجھانا کیا تھا،میاں صاحب سمجھے کیا،یہ پھر کبھی ، پنجاب ہاؤس اس لئےبھی ہمیشہ یاد رہے گا کہ یہاں میں اپنے پسندیدہ امام کعبہ شیخ عبدالرحمن سدیس سے ملا۔اللہ نے کیا کمال آواز دی ہے انہیں ،ویسے بھولے گا تو خیبر پختونخوا ہاؤس بھی نہیں ،یہاں میں نے دلیپ کمار ،سائرہ بانو کا انٹرویو کیا، یوسف خان المعروف دلیپ کمار ایوارڈ لینے آئے ہوئے تھے ، مجھے ابھی بھی یاد جب میں نے دلیپ کمار سے پوچھا، آپ اپنی حقیقی زندگی میں بھی اتنے ہی رومانٹک ہیں، جتنے فلمی زندگی میں تو اس سے پہلے وہ کوئی جواب دیتے ،سائرہ بانو ہنستے ہوئے بولیں،بالکل بھی نہیں، انہوں نے تو مجھے پروپوز بھی اتنے ان رومانٹک طریقے سے کیا ،سناؤں تو آپ دنگ رہ جائیں گے ،یہ سن کر زیر لب مسکراتے دلیپ کمار نے کہا،بھائی ایک بات تو بتاؤ۔کبھی آپ نے سنا کہ ایک سرکس میں کام کرنے والا گھر آکر بھی وہی کرتب دکھاتا ہو جو وہ سرکس میں دکھاتا ہے، یا موت کے کنوئیں میں موٹر سائیکل چلانے والا گھر آکر بھی موٹر سائیکل چلاتا ہو، گھر کی زندگی اور،فلمی زندگی اور، لیکن یہ سچ کہ ہم نے جتنا فلمی ہیروئنوں کو فلموں میں پیار کیا ہوگا ،ا س سے کہیں زیادہ حقیقی زندگی میں اپنی بیگم سے کیا۔مگریہ نہ کسی بیوی نے مانا اورنہ ہماری بیگم مانیں گی، مجھے اچھی طرح یاد ،اگلے دن دلیپ کمار نے اپنا آبائی گھر دیکھنے پشاور جانا تھا ،وہ اس روز بھی بات بات پر جذباتی انداز میں پشاور کا ذکر چھیڑ دیتے، خود بتایا ، آج میر ی کیفیت اس بچے جیسی جسے اس کا پسندیدہ کھلونا ملنے والا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں