عثمان بزدار چھا گئے۔!! لاہور میٹرو بس کے نئے معاہدے کی منظوری دے دی، پی ٹی آئی حکومت نے شہباز شریف کے معاہدے کی نسبت کتنی کم قیمت پر معاہدہ کیا؟ یقین کرنا مشکل

عثمان بزدار چھا گئے۔!! لاہور میٹرو بس کے نئے معاہدے کی منظوری دے دی، پی ٹی آئی حکومت نے شہباز شریف کے معاہدے کی نسبت کتنی کم قیمت پر معاہدہ کیا؟ یقین کرنا مشکل

لاہور (ویب ڈیسک) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارنے لاہور میٹرو بس کے نئے معاہدے کی منظوری دے دی۔ عثمان بزدار نے ٹوئٹ میں لکھا کہ آج ہم نے لاہور میٹرو بس کے نئے معاہدے کی 304 روپے فی کلومیٹر کے حساب سےمنظوری دی ہے، اگر 2012 میں ہونےوالے معاہدے (368 روپے) پر

ہی 8 سال میں ہونےوالی مہنگائی اور ڈالر ریٹ کے حساب سے معاہدہ ہوتا تو لاگت 532روپے ہوتی۔ عثمان بزدار نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ یہ کامیابی ہماری حکومت کی شفاف اور میرٹ پر مبنی پالیسیوں کا پھل ہے،اس معاہدے کے تحت نئی آنے والی بسیں بھی ماحول دوست اور بہتر ٹیکنالوجی کی حامل ہوں گی،جس سے لاہور کے ماحولیاتی تحفظ کی ہماری کوششوں کو مزید تقویت ملے گی۔ دوسری جانب زیراعلیٰ عثمان بزدارکی قیادت میں پنجاب حکومت کا ایک اور مثالی اقدام-بزدار حکومت کی شفاف ترین پالیسیوں کا ثمر…………قومی خزانے کو 300کروڑ سے زائد کا فائدہ -لاہور میٹرو بس سسٹم کو آپریٹ کرنے کی بولی میں اربوں روپے کی بچت کرکے نئی مثال قائم کردی-سرمایہ کاروں کی جانب سے بزدار حکومت کی شفاف ترین بزنس فرینڈلی پالیسیوں پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیاہے-وزیراعلی عثمان بزدار کی قیادت میں تحریک انصاف کی حکومت کے دور میں لاہور میٹروبس سسٹم کو آپریٹ کرنے کے ٹینڈر میں 304روپے کلومیٹر بولی دی گئی اورموجودہ بولی شہباز شریف کے سابق دور میں دی گئی بولی کے مقابلے میں 20 فیصد کم رہی ہے- کم بولی کے باعث پنجاب حکومت کے خزانے کو3 ارب روپے سے زائد کی بچت ہوئی ہے-کم بولی کے باعث میٹرو بس سروس پر دی جانے والی سبسڈی میں کمی ہو گی او راگر ڈالر کے حساب سے موازانہ کیا جائے تو بزدار حکومت کی بولی سابق حکومت کے مقابلے میں 40فیصد کم بنتی ہے-موجودہ بولی میں فارن کرنسی میں ادائیگی نہیں کرنی کیونکہ سرمایہ کار مقامی ہیں –

اپنا تبصرہ بھیجیں