اناللہ وانا الیہ راجعون۔!! پورے ملک میں سوگ۔۔۔۔۔ بڑے عالم دین اور مذہبی رہنما کے انتقال کی خبر آگئی

اناللہ وانا الیہ راجعون۔!! پورے ملک میں سوگ۔۔۔۔۔ بڑے عالم دین اور مذہبی رہنما کے انتقال کی خبر آگئی

سرگودھا (ویب ڈیسک) سرگودھا سے تعلق رکھنے والی معروف مذہبی شخصیت سجادہ نشین درگاہِ عالیہ سیال شریف حضرت خواجہ پیر حمید الدین سیالوی انتقال کر گئے۔ حضرت خواجہ پیر حمید الدین سیالوی کا تعلق ضلع سرگودھا کے گاؤں سیال شریف سے تھا وہ درگاہ عالیہ سیال شریف کے سجادہ نشین تھے،

وہ 1988 سے لے کر 1993 تک سینٹ کے ممبر بھی رہے۔وہ عقیدت مندوں کا ایک وسیع حلقہ رکھتے تھے، انہوں نے ن لیگ کی حکومت کے دوران ختم نبوتؐ کے سلسلے میں انتہائی اہم کردار ادا کیا تھا، انہوں نے یہ بھی دعویٰ کیا تھا کہ کئی اراکین اسمبلی جن کا تعلق ن لیگ سے ہے ان کے استعفے اپنے اس ہونے کا دعویٰ بھی کیا تھا۔ حضرت خواجہ محمد حمید الدین سیالوی سجادہ نشین آستانہ عالیہ سیال شریف وفات پاگئے۔ ان کی نماز جنازہ آج 18 ستمبر بروز جمعہ آستانہ عالیہ سیال شریف میں ادا کی جائے گی۔خواجہ محمد حمیدالدین سیالوی علیل تھے۔ ان کی طبیعت اچانک بگڑی اور انہیں سرگودھا کے ایک نجی ہسپتال میں لے جایا گیا جہاں آئی سی یو میں ان کو طبی امداد دی جارہی تھی لیکن وہ جانبر نہ ہوسکے اور جان جانِ آفریں کے سپرد کردی۔ ان کی عمر ستاسی برس تھی۔ وہ اپنے والد شیخ الاسلام خواجہ محمد قمرالدین سیالوی کے وصال کے بعد 1982میں سجادہ نشیں بنے۔ انہیں نواز شریف کی پہلی حکومت کے دوران مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر سینیٹر رہنے کا اعزاز بھی حاصل رہا۔ ان کے چھوٹے بھائی غلام نصیرالدین سیالوی صوبائی وزیر اوقاف رہے۔ حمیدالدین سیالوی نے نواز شریف حکومت کے خلاف ختم نبوت کے مسئلہ پر 2017میں ملک گیر تحفظ ختم نبوت تحریک کی قیادت بھی کی۔ ان کی وفات کی خبر سن کر مریدین کی سیال شریف میں آمد جاری ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے ان کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے اسے ملک و ملت کے گہرا نقصان قرار دیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں