معروف بالی ووڈ اداکار مودی راج سے تنگ آگر اپنے گردے بیچنے پر مجبور ہوگئے

الی ووڈ کی مشہور فلم ‘منّا بھائی ایم بی بی ایس میں سرکٹ کا کردار نبھا کر شہرت کی بلندیوں پر پہنچنے والے اداکار ارشد وارثی نے بجلی کے بھاری بھر کم بلوں کی ادائیگی کے لئے اپنا گردہ بیچنے کا سوچ لیا ہے۔

انہوں نے اپنی ایک ٹویٹ میں بتایا کہ ان کا بجلی کا بل ماضی کی نسبت کئی گنا زیادہ آیا ہے اور جون کا بل ادا کرنے کے لئے انہوں نے اپنے اکاؤنٹ سے ایک لاکھ 3 ہزار 564 روپے نکالے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ارشد وارثی نے 5 جولائی کو اپنی متعدد ٹوئٹس میں جون کے اضافی بل کی شکایت کی اور بتایا کہ ان کا ایک ماہ کا بل ایک لاکھ روپے سے زیادہ آیا ہے۔

ارشد وارثی نے اپنے مداحوں سے درخواست کی ہے کہ برائے مہربانی میری پینٹنگز خرید لیں، مجھے اپنے بجلی کے بل ادا کرنے ہیں۔

انہوں نے مزید لکھا کہ وہ اپنے گردے آنے والے مہینے کے بجلی کے بل کے لئے رکھ رہے ہیں۔

ایک جانب بھارت میں کورونا لاک ڈاؤن کے باعث فنکاروں کی معاشی صورتحال خراب ہے وہیں دوسری جانب مودی راج میں ممبئی میں رہائش پزیر ارشد وارثی سمیت کئی معروف فنکار بجلی کے بلوں میں ہوشربا اضافے سے پریشان ہیں۔

بھارت میں موجود دیگر فنکار برادری بھی سوشل میڈیا کے ذریعے بلوں میں زیادتی کے خلاف احتجاج کر رہی ہے، ان فنکاروں میں تاپسی پنو، ہما قریشی، نمرت کور، سوہا علی خان، ڈینو موریا اور دیگر بھی شامل ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں