مسلم لیگ (ن) نے 5 سالوں میں 50 ارب ڈالر جبکہ تحریک انصاف نے گزشتہ 2 سال میں کتنا قرضہ لیا؟ پول کھول دینے والے اعداد وشمار

مسلم لیگ (ن) نے 5 سالوں میں 50 ارب ڈالر جبکہ تحریک انصاف نے گزشتہ 2 سال میں کتنا قرضہ لیا؟ پول کھول دینے والے اعداد وشمار

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی ابلاغ ڈاکٹر شہباز گل نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) نے 5 سالوں میں 50 ارب ڈالر کا قرضہ لیا جبکہ 27 ارب ڈالر واپس کئے۔منگل کو ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ ن لیگ نے نیٹ 23 ارب ڈالر کا اضافہ کیا

کمرشل بینکوں سے مہنگا ترین قرضہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت 2 سالوں میں ان کی قسطیں واپس کرنے کے لئے 22 ارب ڈالر کا قرضہ لیا اور 20 ارب ڈالر واپس کیا جبکہ نیٹ صرف 2 ارب اضافہ اور کمرشل بینکوں سے کوئی قرضہ نہیں لیا۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیراعظم کی زیر صدارت گندم اور چینی کی دستیابی اور قیمتوں سےمتعلق اجلاس ہوا جس میں وزیراعظم کو ملک میں گندم کی دستیابی کی صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔اجلاس میں نجی اور سرکاری سطح پر کی جانے والے درآمد میں اب تک کی پیشرفت رپورٹ پیش کی گئی، چیئرمین ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان نے اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ نجی شعبےکی جانب سےاب تک تقریباً4لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمدکی جا چکی ہے مزید10لاکھ ٹن گندم اگلےماہ ملک میں پہنچ جائےگی۔چیئرمین ٹی سی پی نے بتایا کہ سرکاری سطح پر15لاکھ میٹرک ٹن گندم امپورٹ کی جا رہی ہے، 3لاکھ 30ہزار میٹرک ٹن گندم کا ٹینڈر کیا جا چکا ہے، گورنمنٹ ٹو گورنمنٹ معاہدےکےذریعےبھی گندم درآمدکی جارہی ہے حکومتی فیصلے کے مطابق چینی کی درآمدبھی جاری ہے، یقینی بنایاجارہاہےکہ چینی کی طلب ورسدمیں کسی قسم کی کمی بیشی نہ ہو۔چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ شوگرملز کو پابند کیا گیا ہے وہ15نومبرتک کرشنگ شروع کریں، قانون کےتحت کرشنگ کےعمل میں تاخیرکرنےپر50لاکھ یومیہ جرمانہ کیاجائےگا۔اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ گندم اور چینی عوام کی بنیادی ضرورت ہیں، دستیابی اور مناسب قیمت میں فراہمی کویقینی بنایاجائے۔وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں گندم کی ضروریات کو مدنظر رکھتےہوئے وافر دستیابی یقینی بنائی جائے اور گندم کی درآمد میں پیش رفت پرمسلسل آگاہ رکھاجائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں