بریکنگ نیوز: بھارتی چینلز پر پابندی عائد کردی

کھٹمنڈو (ویب ڈیسک) نیپال نے بھارتی نیوز چینلز پر پابندی عائد کردی، نیپال کی جانب سے بھارتی سرکاری ٹی وی چینل دور درشن کے علاوہ تمام نیوز چینلز پر پروپیگنڈا چلانے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق نیپال نے بھارتی چینل پر پابندی عائد کردی ہے البتہ نیپال حکومت ابھی تک اس اقدام

سے متعلق باضابطہ حکم جاری نہیں کررہی ہے لیکن متعدد میڈیا تنظیموں کے حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ اقدام ہندوستانی نیوز چینلز میں سے کچھ کی جانب سے نیپال کے خلاف ہتک آمیز شوز سمیت نیپال سے متعلق بے بنیاد رپورٹس کے تناظر میں سامنے آیا ہے۔واضح رہے کہ اس سے قبل نیپال نے بہار میں اراضی کا دعوی کرتے ہوئے بھارتیوں کو پشتہ بندی کے کام سے روک دیا ہے۔نیپالی پارلیمان کے ایوان بالا کی جانب سے بھارتی علاقوں کو ملک میں شامل کرنے کے لیے ایک نئے سیاسی نقشہ کی توثیق کے بمشکل چار دن بعد میں نیپال نے ایک بار پر بھارت کے ساتھ اپنی بین الاقوامی سرحد کی تکرار کی ہے اور اس بار تنازع کا علاقہ بہار کے ساتھ نیپال کی سرحد ہے۔نیپالی حکام نے حیرت انگیز طور پر بہار حکومت کے محکمہ آبی وسائل کے حکام کو سرحد پر پشتہ بندی سے متعلق کام شروع کرنےسے روک دیا ہے اور دعوی کیا ہے کہ یہ علاقہ ان کی سر زمین کا حصہ ہے۔ یپال نے ’لیپولیخ‘ کے سرحدی علاقے میں فوج تعینات کردی۔ بھارتی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق عارضی طور پر لگائے گئے کیمپوں میں نیپال کے فوجیوں کو دیکھا جا سکتا ہے، ایسا اس علاقے میں پہلے بار دیکھنے میں آیا ہے۔اس سے قبل نیپال کی پارلیمنٹ نے نئے نقشے میں لیپولیخ کے علاقے کو نیپال کا علاقہ قرار دے دیا ہے۔ اس کے علاوہ ایک مقامی رہائشی نے انڈیا ٹوڈے ٹی وی کو بتایا کہ نیپالی فوج نے ایک ہفتہ قبل کالابانی سے 40 کلومیٹر پہلے ملبار نامی جگہ پر ایک چوکی بھی تعمیر کی تھی اور اہلکاروں کو وہاں ہیلی کاپٹر کے ذریعے لایا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں