بریکنگ نیوز: ڈیزل والی بات حقیقت نکلی۔۔!! مولانا فضل الرحمان کے پاس کتنے اثاثے ہیں؟ نیب کو سراغ مل گیا

بریکنگ نیوز: ڈیزل والی بات حقیقت نکلی۔۔!! مولانا فضل الرحمان کے پاس کتنے اثاثے ہیں؟ نیب کو سراغ مل گیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمان کے اثاثوں کی تحقیقات میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق آمدن سے زائد اثاثوں میں مولانا فضل الرحمان کیخلاف نیب نے تحقیقات شروع کی ہوئی ہیں اور ان کے اثاثوں کی ابتدائی معلومات بھی حاصل کرلی ہیں

جب کہ نیب نے مولانا کے قریبی موسیٰ خان کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔ نیب کو حاصل معلومات کے مطابق فضل الرحمان بنگلے، سیکڑوں کنال زرعی اراضی اور دکانوں کے مالک نکلے ہیں۔ مولانا کے اثاثوں میں چک شہزاد اسلام آباد میں 3 ارب مالیت کی زمین حال ہی میں فروخت کیا گیا۔ اس کے علاوہ مولانا کا ایف 8 اسلام آباد میں بنگلہ، پشاور، کراچی اور کوئٹہ میں مارکیٹیں بھی شامل ہیں جب کہ کی ڈیرہ اسماعیل خان میں سینکڑوں کنال اراضی ہے۔ دوسری جانب قومی احتساب بیورو (نیب) نے جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو طلب کرلیا۔ نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان پر مالی بدعنوانیوں کے الزامات ہیں، مولانا فضل الرحمان کو یکم اکتوبر کو نیب خیبر پختونخوا سامنے پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمان سے کہا گیا ہے کہ وہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کے ثبوت دیں، مولانا فضل الرحمان کو نیب کے پی میں ایڈیشنل ڈائریکٹر اسرار الحق کے سامنے پیش ہونےکا کہا گیا ہے۔ مولانا فضل الرحمان کو بھیجے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ جواب سے مطمئن نہ ہونے پر گرفتاری بھی عمل میں لائی جا سکتی ہے۔ مولانا فضل الرحمن کی نیب طلبی پر ترجمان جے یو آئی حافظ حسین احمد نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ احتساب کے نام پر نیب کو انتقام اور اپنی بقا کے لیے استعمال کیا جارہا ہے۔ حافظ حسین احمد نے کہا کہ اے پی سی کے بعد مولانا فضل الرحمان کی نیب میں طلبی سے معلوم ہوتا ہے تیرنشانے پر لگا، اپوزیشن رہنما حکومت کے خلاف رفتار تیز کرتے ہیں تو نیب کا اسپیڈ بریکر استعمال کیا جاتا ہے۔ حافظ حسین احمد نے کہا کہ ادویات، چینی، گندم اسکینڈل سمیت بی آرٹی اور مالم جبہ جیسے میگا اسکینڈلز سامنے آئے، نیب ان اسیکنڈلز پر خاموش ہے، اوچھے ہتھکنڈوں سے ہمیں ڈرایا نہیں جاسکتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں