خواجہ آصف کے آصف زرداری پر اعتراضات! پیپلز پارٹی نے کیا سوچنا شروع کر دیا؟ حامد میر کا تہلکہ خیز انکشاف

خواجہ آصف کے آصف زرداری پر اعتراضات! پیپلز پارٹی نے کیا سوچنا شروع کر دیا؟ حامد میر کا تہلکہ خیز انکشاف

اسلام آباد (نیوز ڈیسک )معروف صحافی اور اینکر پرسن حامد میر نے کہا ہے کہ خواجہ آصف کے آصف علی زرداری کے خلاف بیان کے بعد پیپلز پارٹی میں بحث شروع ہو گئی ہے اور کچھ رہنما چاہتے ہیں کہ بلاول بھٹو کوئٹہ جلسے میں نہ جائیں ،اب وفاقی وزراءبھی دعوے کر

رہے ہیں پیپلز پارٹی ایک خاص حد سے آگے نہیں جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف کے بیان نے شک و شبہات پیدا کیے ،اگرچہ نواز شریف نے شک دور کرنے کی بھر پور کوشش کی لیکن اب پیپلز پارٹی کی قیادت کو کوئٹہ جانے سے روکنے کی کوشش کی جا رہی ہے ،اگر پیپلز پارٹی کی قیادت کو کوئٹہ جلسے میں جانے سے روکا جاتا ہے تو اس سے پیپلز پارٹی اور اپوزیشن کو بڑا نقصان ہو گا۔نجی نیوز چینل جیو کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے بیانیے پر غور کریں تو اس میں یہ بات ہے کہ فوج کو سیاسی معاملات میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے، دوسری جانب فوج بھی یہ ہی کہہ رہی ہے کہ ہمیں سیاسی معاملات میں نہ لا یا کریں ،نواز شریف کہتے ہیں کہ ریاست سے اوپر ایک ریاست ہے لیکن اگر ایسا ہے تو یہ معاملہ کب سے ہے ؟ایک سال پہلے جنرل باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع پر مسلم لیگ ن نے نواز شریف کے کہنے پر کھلے دل کے ساتھ سپورٹ کیا ،اس وقت مسلم لیگ ن نے توسیع کو سپورٹ کیوں کیا ؟۔حامد میر نے کہا کہ لگتا یوں ہے کہ نواز شریف پہلے شہباز شریف کے بیانیے کو ساتھ لے کر چلنے کی کوشش کر رہے تھے لیکن جب وہ ناکام ہوا تو نواز شریف کھل کر سامنے آگئے ،مسلم لیگ ن کے اجلاس میں سب لوگوں نے کہا ہے کہ ہم نواز شریف کے بیانیے کے ساتھ ہیں لیکن لیگی رہنما دل سے اس بیانیے کے ساتھ کھڑے نظر نہیں آتے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں