بریکنگ نیوز: امریکی صدر ٹرمپ نے کورونا وائرس کو شکست دے دی ، اسپتال سے ڈسچارج ہوتے ہی بڑا اعلان

بریکنگ نیوز: امریکی صدر ٹرمپ نے کورونا وائرس کو شکست دے دی ، اسپتال سے ڈسچارج ہوتے ہی بڑا اعلان

واشنگٹن (ویب ڈیسک) کورونا وائرس سے متاثرہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو والٹر ریڈ ہسپتال سے وائٹ ہاؤس منتقل کر دیا گیا ہے اور انھوں نے انتخابی مہم میں جلد واپسی کا اعلان بھی کیا ہے۔پیر کے روز ان کی جانب سے ایک ٹویٹ کے ذریعے اعلان کیا گیا تھا کہ وہ اب بہت

بہتر محسوس کر رہے ہیں اور انھیں آج ہی وائٹ ہاؤس منتقل کر دیا جائے گا۔اس کے ساتھ ہی صدر ٹرمپ کی جانب سے ایک اور ٹویٹ بھی سامنے آئی ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ ان کی ’انتخابی مہم میں جلد واپسی ہو گی۔‘صدر ٹرمپ کو والٹر ریڈ ہسپتال سے مرین ون ہیلی کاپٹر کے ذریعے وائٹ ہاؤس منتقل کیا گیا۔ ہسپتال سے نکلتے وقت انھوں نے نیلے رنگ کا پینٹ کوٹ کے علاوہ ٹائی اور ماسک بھی پہن رکھا تھا۔ جب ٹرمپ والٹر ریڈ ہسپتال سے باہر آ رہے تھے تو وہ مکا دکھا رہے تھے۔انھوں نے کہا ‘سب کا بہت شکریہ’۔ تاہم انھوں نے میڈیا کے سوالات کا جواب نہیں دیا جن میں ایک صحافی کا یہ سوال بھی شامل تھا کہ ‘صدر صاحب، کیا آپ ایک سپر سپریڈر ہیں؟’صدر ٹرمپ ہسپتال سے ہیلی کاپٹر کے ذریعے مختصر دورانیے میں وائٹ ہاؤس پہنچ گئے جہاں انھوں نے ٹرومین بالکنی میں کھڑے ہو کر تصاویر بنوائیں اور حفاظتی ماسک اتار دیا۔خیال رہے کہ اب تک امریکہ میں 74 لاکھ سے زیادہ افراد اس وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں جبکہ اس کے نتیجے میں دو لاکھ 10 ہزار افراد انتقال کر چکے ہیں۔تاہم صدر ٹرمپ کی بیماری کی نوعیت کے حوالے سے سوالات اب بھی موجود ہیں کیونکہ سنیچر اور اتوار کے روز متضاد بیانات سامنے آتے رہے ہیں۔ جبکہ وائٹ ہاؤس میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے حوالے سے تاحال کچھ بھی واضح نہیں ہے۔صدر ٹرمپ کو ایک ایسے موقع پر ڈسچارج کیا گیا ہے جب وائٹ ہاؤس سٹاف کے مزید افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

اب تک ٹرمپ کے قریبی کم از کم 12 افراد کا کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آ چکا ہے جبکہ متعدد جونیئر سٹاف اراکین بھی اس فہرست میں شامل ہیں۔ایسے متعدد افراد جن کا کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آیا ہے انھوں نے 26 ستمبر کو وائٹ ہاؤس میں ایک اجلاس میں شرکت کی تھی جسے ممکنہ طور پر ‘سپر سپریڈر تقریب’ کا نام دیا جا رہا ہے۔اب تک وائٹ ہاؤس کی جانب سے اس حوالے سے وضاحت سامنے نہیں آئی کہ صدر ٹرمپ میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد سے اب تک کتنے سٹاف اراکین میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔کورونا وائرس سے متاثرہ تازہ ترین شخصیت کیلی فورنیا سے تعلق رکھنے والے وزیر پادری گریگ لاری ہیں۔ جو اس تقریب کا حصہ تھے جس میں صدر ٹرمپ نے امریکی سپریم کورٹ کے لیے امیدوار کا اعلان کیا تھا۔وائٹ ہاؤس کے روز گارڈن میں ہونے والی اس تقریب سے قبل لاری امریکی نائب صدر مائیک پینس کے ساتھ واشنگٹن ڈی سی میں منعقد ہونے والی ایک دعائیہ تقریب میں بھی شریک ہوئے تھےان کے اس اعلان کے کچھ ہی دیر بعد ان کے معالجین کی جانب سے ایک پریس بریفنگ کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ ’ٹرمپ ابھی پوری طرح صحتیاب نہیں ہوئے لیکن ان کی وائٹ ہاؤس منتقلی محفوظ ہے۔‘خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ میں جمعے کو کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی جس کے بعد انھیں والٹر ریڈ ہسپتال منتقل کر دیا گیا تھا۔سرکاری معالج ڈاکٹر شان کونلی نے پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ صدر ٹرمپ کی صحت بتدریج بہتر ہو رہی ہے اور اب ہم انھیں ہسپتال سے ڈسچارج کرنے کے لیے تیار ہیں۔(بشکریہ : بی بی سی )

اپنا تبصرہ بھیجیں