کیا آپ مریم نواز کو بطور وزیراعظم تسلیم کریں گے؟ صحافی کے سوال پر مولانا فضل الرحمان نے حیران کُن جواب دے دیا

کیا آپ مریم نواز کو بطور وزیراعظم تسلیم کریں گے؟ صحافی کے سوال پر مولانا فضل الرحمان نے حیران کُن جواب دے دیا

رائے ونڈ (ویب ڈیسک) جمیعت علمائے اسلام ف اور اب پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی جانب سے مسلم لیگ ن کی صدر مریم نواز سے جاتی امراء لاہور میں خصوصی ملاقات کی گئی۔ جس کے بعد دونوں رہنماؤں کی جانب سے پریس کانفرنس بھی کی گئی۔

پریس کانفرنس کے دوران ایک صحافی کی جانب سے مولانا فضل الرحمان سے سوال کیا گیا کہ آپ ماضی میں عورت کی حکمرانی کو ناجائز قرار دیتے رہے ہیں، تو اب اگر مریم نواز وزیراعظم بننے میں کامیاب ہوتی ہیں، تو ایسے میں کیا انہیں ملک کی حکمراں تسلیم کریں گے؟ اس سوال کا جواب دینے کی بجائے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آپ کو یہ سوال پیچھے سے فیڈ کیا گیا ہے۔ مشترکہ نیوز کانفرنس کے دوران ایک صحافی نے مریم نواز سے سوال پوچھا کہ، ‘ایک سال پہلے آپ لوگوں نے آرمی چیف کی ایکسٹینشن کی غیر مشروط حمایت کی تھی لیکن ایک سال بعد ایسا کیا ہوا کہ آپ اتنی دور تک چلے گئے کہ آپ نے ادارے کے اوپر تنقید کی۔ کیا نواز شریف کا انہیں آرمی چیف بنانے اور غیر مشروط حمایت کا فیصلہ درست تھا؟‘ اس سوال کے جواب میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ ’سوال وہ پوچھا کریں جس کے جواب کا بوجھ آپ کا چینل اٹھا سکے۔ اس جواب کا بوجھ آپ کا چینل نہیں اٹھا سکتا، آپ تو بہت مجبور لوگ ہیں، آپ تو میاں صاحب کی سپیچ نہیں چلاسکتے تو اس سوال کا جواب کیسے چلائیں گے۔‘

اپنا تبصرہ بھیجیں