یہ ہے نیا پاکستان۔۔!! اب بھنگ نہیں بلکہ زیتون۔۔۔ جماعت اسلامی نے اہم قدم اُٹھا لیا، جان کر آپ بھی داد دیں گے

یہ ہے نیا پاکستان۔۔!! اب بھنگ نہیں بلکہ زیتون۔۔۔ جماعت اسلامی نے اہم قدم اُٹھا لیا، جان کر آپ بھی داد دیں گے

پشاور(ویب ڈیسک) ‘بھنگ نہیں زیتون’جماعت اسلامی کا دبنگ جواب شاندار کردار۔ اطلاعات کے مطابق جماعت اسلامی نے جنگلی زیتون کو پھلدار زیتون میں تبدیل کرنے سے متعلق قرار دادر خیبر پختونخوا اسمبلی میں جمع کروا دی۔ قراردادجماعت اسلامی کے اراکین اسمبلی عنایت اللہ خان، سراج الدین خان اورحمیراخاتون نے جمع کرائی۔

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ جنگلی زیتون کو پھلدار زیتون میں تبدیل کر کے معیشت کو پروان چڑھایا جا سکتا ہے۔قرارداد کے مطابق خیبرپختونخوا میں کروڑوں کی تعداد میں جنگلی زیتون کے درخت ہیں، جنگلی زیتون کو پیوندکاری سے پھل دار زیتون میں تبدیل کیا جا سکتا ہے،زیتون کی پیدوار بڑھا کر ملک اور صوبے کی معیشت کو بہتر بنایا جاسکتا ہے۔ چند روز قبل امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے دیر میں زیتون کی باغبانی مہم کا افتتاح کیا تھا۔اس موقع پر انہوں نے زیتون کے پودے بھی لگائے۔امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ ملک کو بھنگ کی نہیں زیتون کی ضرورت ہے۔حکومت بھنگ کے بجائے زیتون کی کاشت پر توجہ دے تو ملک کو اربوں روپے کا زرمبادلہ مل سکتاہے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کو وادیٔ زیتون قرار دیا جائے۔ وفاقی اور خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومت اس سلسلے میں فوری اقدامات کریں اور علاقے میںنرسریز اور تحقیقی مراکز قائم کیے جائیں۔ملاکنڈ ڈویژن میں زیتون کے تیل کے کارخانے لگائے جائیں۔پاکستان بنیادی طور پر ایک زرعی ملک ہے جب تک زراعت کو ترقی نہیں دی جاتی ملک ترقی نہیں کرے گا۔ سینیٹر سراج الحق نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ زراعت ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کا درجہ رکھتی ہے۔ گنا ،گندم ،کپاس ،چاول اور باغات کے لیے مختلف ڈویژن مقرر کیے جائیں اور وہاں کے کسانوں کو خصوصی مراعات دی جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں