کورونا کیسزبڑھ گئے۔۔!! عالمی وبا نے پھر سر اُٹھا لیا، اسد عمر نے خطرے کی گھنٹی بجادی

کورونا کیسزبڑھ گئے۔۔!! عالمی وبا نے پھر سر اُٹھا لیا، اسد عمر نے خطرے کی گھنٹی بجادی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ کورونا کی دوسری لہر کے سبب کیسز میں اضافہ ہو گیا جس کے بعد کراچی، اسلام آباد، آزاد کشمیر میں منی اسمارٹ لاک ڈاؤن دوبارہ نافذ کیا گیا ہے، کامیابی پہلے کی طرح عوام کے تعاون کے بغیر ناممکن ہے۔

اسدعمر کا کہنا ہے کہ 6 ہفتے تک کورونا کیسز دو فیصد مثبت رہے، گزشتہ ہفتے اس میں دو فیصد اضافہ ہوا۔ کراچی، آزاد کشمیر میں منی اسمارٹ لاک ڈاؤن دوبارہ نافذ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کے تین سیکٹرز میں اسمارٹ لاک ڈاؤن لگا دیا گیا، متاثرہ علاقوں سے کورونا ٹیسٹ کیلئے نمونے حاصل کئے جا رہے ہیں۔ سیکٹر جی 11 ٹو اور جی 7 تھری کے دو اسکولز سیل کر دیئے گئے، ڈی سی اسلام آباد کے مطابق 32 ریسٹورنٹس، 47 دُکانیں اور ایک ورکشاپ کو بھی سیل کیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر اسد عمر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ گزشتہ 6 ہفتے اوسط قومی سطح پر کورونا کیسز کی تعداد 2 فیصد سے کم تھی تاہم گزشتہ ہفتے کورونا کیسز کی تعداد میں اضافہ 2 فیصد سے زیادہ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کیسز میں اضافے کی وجہ سے کراچی، اسلام آباد اور آزاد کشمیر میں منی اسمارٹ لاک ڈاوَن دوبارہ نافذ کیا گیا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ ملک بھر میں انتظامیہ کو حفاظتی اقدامات یقینی بنانے کی ہدایت دی گئی ہے تاہم کورونا وائرس کے خلاف کامیابی پہلے کی طرح عوام کے تعاون کے بغیر ناممکن ہے۔ دوسری جانب اتوار کی صبح وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی مختلف گلیوں میں عالمی وبا کورونا وائرس کی وجہ سے اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کر دیا گیا۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے آگاہ کیا گیا کہ سیکٹر جی 10 فور کی گلی نمبر 38، 44، 45، 46، 47، 48 کوسیل کر دیا گیا ہے جبکہ سواں روڈ کی گلیوں کو بھی سیل کیا گیا ہے۔ اسلام آباد کے سیکٹر آئی ایٹ 2 کی گلی نمبر 25 اور29 کو بھی سیل کر دیا گیا ہے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق سیکٹر جی نائن 4 کی گلی نمبر 85 اور 89 کو بھی سیل کر دیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں