چترال کی 12سالہ خوبصورت لڑکی کے ساتھ شادی: رنگین خواب چکنا چور۔۔۔ مشہورِ زمانہ پاکستانی شخصیت حاجی سلطان گولڈن کا اسکینڈل سامنے آگیا

چترال کی 12سالہ خوبصورت لڑکی کے ساتھ شادی: رنگین خواب چکنا چور۔۔۔ مشہورِ زمانہ پاکستانی شخصیت حاجی سلطان گولڈن کا اسکینڈل سامنے آگیا

چترال (ویب ڈیسک) ذرائع کے مطابق پاکستانی ریکارڈ یافتہ اسٹنٹ مین سلطان محمد خان نے رواں برس جولائی کے مہینے میں چترال کے ایک گاؤں میں کمسن لڑکی کو زائد عمر کی دکھا کر شادی کر لی تھی، جس کا علم ہونے پر چترال کی ایک فلاحی تنظیم نے تفتیش کی تو معلوم ہوا کہ لڑکی کی

عمر جعلی کاغذات تیار کرکے زیادہ دکھائی گئی ہے۔ فلاحی تنظیم اور چترال کی انتظامیہ کی جانب سے کی گئی تفتیش کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ لڑکی کے والد نے لڑکی کے سکول سرٹیفیکیٹ اور ویکسینیشن کے سرٹیفیکیٹ چھپا کر یونین کونسل سے نیا پیدائشی سرٹیفکیٹ حاصل کیا جس پر لڑکی کی اسلام عمر سے زائد عمر لکھوائی گئی اور اس کا جعلی شناختی کارڈ بنوایا گیا، لڑکی کے اسی جعلی شناختی کارڈ پر سلطان محمد خان نے کم عمر لڑکی سے شادی کرلی۔ لڑکی کے اسکول اور ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ سے معلوم ہوا کہ لڑکی کی عمر 12 سال بنتی ہے، جس کا سلطان محمد خان المعروف گولڈن خان کا نکاح کروانے والے نکاح رجسٹرار کو علم ہوا تو اس نے بھی دونوں کا نکاح نامہ منسوخ کر دیا۔ فلاحی تنظیم اور چترال کی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے نادرا کو بھی درخواست دی گئی ہے کہ جعلی سرٹیفکیٹ اور کاغذات تیار کرکے جعلسازی کے ذریعے شناختی کارڈ حاصل کرنے پر کم عمر لڑکی کے والد اور اس سے شادی کرنے والے سلطان محمد کے خلاف نادرا آرڈیننس 2000 کے تحت جعلی سازی کے ذریعے دستاویزات حاصل کرنے پر کاروائی کی جائے اور دونوں ملزمان کو قرار واقعی سزا دی جائے۔ دوسری جانب لڑکی کے والد اور سلطان محمد خان نے دعوی کیا ہے کہ لڑکی کی عمر اٹھارہ سال سے زائد ہے اور لڑکی کی عمر 12 سال کے حوالے سے گردش کرنے والی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے، تاہم خبر رساں ادارے کی تحقیقات کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ لڑکی کے والد اور سلطان محمد خان نے اثرورسوخ استعمال کرتے ہوئے لڑکی کے سکول کے ریکارڈ کو بھی تبدیل کروانے کی کوشش کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں