میری عمر بھی ٹرمپ کو لگ جائے ۔۔۔!!!امریکی صدر ٹرمپ کی وجہ سے ایک بھارتی شہری کی جان چلی گئی ، مگر کیسے ؟ جان کر آپ یقین نہیں کریں گے

میری عمر بھی ٹرمپ کو لگ جائے ۔۔۔!!!امریکی صدر ٹرمپ کی وجہ سے ایک بھارتی شہری کی جان چلی گئی ، مگر کیسے ؟ جان کر آپ یقین نہیں کریں گے

لاہور (ویب ڈیسک) ڈونلڈ ٹرمپ سے محبت میں بھارتی شہری اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پوجا کرنے اور ان کے کورونا میں مبتلا ہونے کے بعد ان کی صحتیابی کیلئے بھوکا رہ کر دعائیں کرنے والا بھارتی شہری انتقال کر گیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست تلنگانہ سے تعلق رکھنے

والا کسان بسا کرشنا راجو صدر ٹرمپ کا بہت بڑا مداح تھا اور ان کی پوجا کیا کرتا تھا ، اس نے گزشتہ برس ٹرمپ کا ایک 6 فٹ کا بت بنوا کر اس کی پوجا شروع کی تھی۔کرشنا راجو کے دوستوں کا کہنا ہے کہ جب اس نے ٹرمپ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کی خبر سنی تو اسے شدید دھچکا لگا اور اس نے ٹرمپ کی صحتیابی کیلئے دعائیں شروع کردیں۔ وہ راتوں کو جاگ کر اور بھوکا رہ کر ٹرمپ کی صحتیابی کی دعائیں کرتا تھا جس کی وجہ سے پیر کو دوپہر کے وقت اسے دل کا دورہ پڑا اور وہ جان کی بازی ہار گیا۔ تفصیلات کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کی کرونا وائرس سے صحتیابی کیلئے کئی روز تک بھوک ہڑتال کرنے والا بھارتی شہری حرکت قلب بند ہونے کے باعث ہلاک ہوگیا۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر کے کرونا وائرس میں مبتلا ہونے کی خبر سنتے ہی بھارتی شہری کرشنا راجو کو شدید صدمہ لگا جس کے بعد اس نے صدر ٹرمپ کی جلد شفایابی کیلئے دن رات بھوکا رہنا شروع کردیا۔بھارتی شہری نے امریکی صدر کی صحت یابی کے لیے منت مانی تھی، جس کے بعد اس نے کھانا پینا چھوڑ دیا تھا۔ کئی دن بھوکا رہنے کی وجہ سے اس کی حالت خراب ہو گئی تھی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق راجو نامی شخص بھوکا رہ کر دن رات امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صحت یابی کے لیے دعا کرتا رہتا تھا۔بھارتی میڈیا ذرائع کے مطابق بھارتی ریاست تلنگانہ سے تعلق رکھنے والا کرشنا راجو گزشتہ برس سے ٹرمپ کے 6 فٹ بلند پُتلے کی پوجا بھی کرتا آرہا تھا جو اس نے خود تیار کیا تھا۔ذ رائع کے مطابق راجو 12 اکتوبر کو اچانک حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے خود ہی موت کے منہ میں چلا گیا۔ واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کچھ دن پہلے کورونا کے شکار ہوئے تھے لیکن چند دن میں ہی ہپستال سے ڈسچارج ہو گئے تھے۔ امریکہ میں کئی اہم شخصیات میں کورونا وائرس کی تشخیص ہو چکی ہے۔ امریکی صدر کو بھی وائٹ ہاؤس کے عملے میں کورونا کی تشخیص ہونے کے باعث ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں