نماز کے بعد یہ وظیفہ پڑھیں

نماز کے بعد یہ وظیفہ پڑھیں

عا سے پہلے کے وظائف درج ذیل وظائف نماز فرض کے بعد دعا سے پہلے پڑھنے کے لئے ہیں: 1. لَا اِلٰهَ اِلَّا اﷲُ وَحْدَهُ لَا شَرِيْکَ لَهُ، لَهُ الْمُلْکُ وَلَهُ الْحَمْدُ يُحْيِيْ وَ يُمِيْتُ وَ هُوَ حَیٌّ لَّا يَمُوْتُ بِيَدِهِ الْخَيْرُ وَهُوَ عَلٰی کُلِّ شَيْئٍ قَدِيْرٌo برکات: حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: اس وظیفہ کے کرنے والے کے گناہ اگرچہ سمندر کی جھاگ کے برابر ہی کیوں نہ ہوں بخش دیئے جاتے ہیں۔ کونسا وظیفہ پڑھنے سے ہر مشکل حل ہوجائے گی؟ اس اردو کے نیچے ویڈیو میں دیکھیں اور ہو سکے تو شیئر بھی ک

(مسلم، الصحيح، کتاب المساجد و مواضع الصلاة، باب استحباب الذکر بعد الصلاة، 1: 418، رقم: 597) 2. اس کے بعد سورۃ توبہ کی آیات 128.129 کی تلاوت کریں: بِسْمِ اﷲِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِo لَقَدْ جَآءَ کُمْ رَسُوْلٌ مِّنْ أَنْفُسِکُمْ عَزِيْزٌ عَلَيْهِ مَا عَنِتُّمْ حَرِيْصٌ عَلَيْکُمْ بِالْمُؤْمِنِيْنَ رَؤُفٌ رَّحِيْمٌo فَاِنْ تَوَلَّوْا فَقُلْ حَسْبِيَ اﷲُ لَآ اِلٰهَ اِلَّا هُوَ ط عَلَيْهِ تَوَکَّلْتُ وَهُوَ رَبُّ الْعَرْشِ الْعَظِيْمِo 3. بعد ازاں یہ تسبیح کریں: سُبْحَانَ اﷲِ: 33 بار؛ اَلْحَمْدُِﷲِ: 33 بار؛ اَﷲُ اَکْبَرُ: 34 بار 4. درج ذیل تسبیح تین بار پڑھیں: سُبْحَانَ اﷲِ بِحَمْدِهِ، سُبْحَانَ اﷲِ الْعَظِيْمِ. پھر دعا کریں۔5. دعا کے اِختتام پر یہ آیات پڑھیں: سُبْحَانَ رَبِّکَ رَبِّ الْعِزَّةِ عَمَّا يَصِفُوْنَo وَ سَلٰمٌ عَلَی الْمُرْسَلِيْنَo وَ الْحَمْدُِﷲِ رَبِّ الْعَالَمِيْنَo (الصّٰفت، 37: 180.182) دُعا کے بعد کے وظائف دعا کے بعد درج ذیل وظائف حسبِ فرصت و سہولت جاری رکھیں: 2. سورۃ الفاتحہ ایک بار 7. آیت الکرسی ایک بار 8. لَا اِلٰہَ اِلاَّ اﷲُ کم از کم سو (100) مرتبہ پڑھیں۔ ایک سو چھیاسٹھ (122) مرتبہ پڑھنا افضل ہے اور آخر میں مُحَمَّدٌ رَّسُوْلُ اﷲِ پڑھیں۔ اس وظیفہ سے صفائے قلب، قبولیت اور قربِ الٰہی نصیب ہو گا۔ 9. استغفار تین بار اَسْتَغْفِرُ اﷲَ الْعَظِيْمَ الَّذِيْ لَا اِلٰهَ اِلَّا هُوَ الْحَيُ الْقَيُوْمُ وَ اَتُوْبُ اِلَيْهِo حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم خود یہ استغفار روزانہ سو (100) مرتبہ فرماتے تھے۔ یہ وظیفہ گناہوں کی بخشش، بلندی درجات، رزق میں وسعت، عطائے الٰہی میں اضافہ حصولِ برکات اور تنگی و مشکلات کے حل کا باعث ہے۔ 10. حَسْبُنَا اﷲُ وَ نِعْمَ الْوَکِيْل طریقہ: تعوذ (اَعُوْذُ بِاﷲِ مِنَ الشَّيْطٰنِ الرَّجِيْمِ) اور تسمیہ

(بِسْمِ اﷲِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيْمِ) پڑھنے کے بعد سورہ آلِ عمران کی درج ذیل دو آیات (173.174) کی تلاوت کریں: اَلَّذِيْنَ قَالَ لَهُمُ النَّاسُ اِنَّ النَّاسَ قَدْ جَمَعُوْا لَکُمْ فَاخْشَوْهُمْ فَزَادَهُمْ إِيْمَانًا وَّ قَالُوْاحَسْبُنَا اﷲُ وَ نِعْمَ الْوَکِيْلُo یہاں پہنچ کر ان کلمات کو سو (100) مرتبہ پڑھیں۔ یہ تسبیح پوری کرنے کے بعد آگے یہ آیت ایک بار پڑھیں اور وظیفہ مکمل کر لیں: فَانْقَلَبُوْا بِنِعْمَةٍ مِّنَ اﷲِ وَ فَضْلٍ لَّمْ يَمْسَسْهُمْ سُوْءٌ وَّاتَّبَعُوْا رِضْوَانَ اﷲِط وَاﷲُ ذُوْ فَضْلٍ عَظِيْمٍO برکات: اس وظیفہ کو مستقل جاری رکھنے سے حفظ نعمت، اﷲ کے فضل و احسان میں اضافہ، دشمن سے امان، خوف و خطر سے نجات، ہدایت الٰہی، مدد و نصرت، اﷲ تعاليٰ کی رحمت اور خصوصاً رضائے الٰہی نصیب ہوتی ہے۔ یہ اکثر اولیاء و صالحین کا وظیفہ ہے۔ خاص مشکل کے اوقات میں بھی اسے کثرت کے ساتھ پڑھا جائے۔ ان شاء اﷲ پریشانی دور ہوگی اور نصرت الٰہی نصیب ہوگی. یہ وظیفہ حضرت شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری کو ان کے والد گرامی حضرت علامہ ڈاکٹر فرید الدین قادری نے عطا فرمایا اور انہیں دمشق کی جامع مسجد اُموی میں مقامِ زکریا علیہ السلام پر غیب سے ظاہر ہونے والے ایک ابدال نے عطا کیا تھا۔ سیدنا امام جعفر صادق رضی اللہ عنہ سمیت بہت سے مشائخ و اولیاء سے بھی یہ منقول ہے۔ 11. درج ذیل درود شریف سو (100) مرتبہ پڑھیں: اَللّٰهُمَّ صَلِّ

(بِسْمِ اﷲِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيْمِ) پڑھنے کے بعد سورہ آلِ عمران کی درج ذیل دو آیات (173.174) کی تلاوت کریں: اَلَّذِيْنَ قَالَ لَهُمُ النَّاسُ اِنَّ النَّاسَ قَدْ جَمَعُوْا لَکُمْ فَاخْشَوْهُمْ فَزَادَهُمْ إِيْمَانًا وَّ قَالُوْاحَسْبُنَا اﷲُ وَ نِعْمَ الْوَکِيْلُo یہاں پہنچ کر ان کلمات کو سو (100) مرتبہ پڑھیں۔ یہ تسبیح پوری کرنے کے بعد آگے یہ آیت ایک بار پڑھیں اور وظیفہ مکمل کر لیں: فَانْقَلَبُوْا بِنِعْمَةٍ مِّنَ اﷲِ وَ فَضْلٍ لَّمْ يَمْسَسْهُمْ سُوْءٌ وَّاتَّبَعُوْا رِضْوَانَ اﷲِط وَاﷲُ ذُوْ فَضْلٍ عَظِيْمٍO برکات: اس وظیفہ کو مستقل جاری رکھنے سے حفظ نعمت، اﷲ کے فضل و احسان میں اضافہ، دشمن سے امان، خوف و خطر سے نجات، ہدایت الٰہی، مدد و نصرت، اﷲ تعاليٰ کی رحمت اور خصوصاً رضائے الٰہی نصیب ہوتی ہے۔ یہ اکثر اولیاء و صالحین کا وظیفہ ہے۔ خاص مشکل کے اوقات میں بھی اسے کثرت کے ساتھ پڑھا جائے۔ ان شاء اﷲ پریشانی دور ہوگی اور نصرت الٰہی نصیب ہوگی. یہ وظیفہ حضرت شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری کو ان کے والد گرامی حضرت علامہ ڈاکٹر فرید الدین قادری نے عطا فرمایا اور انہیں دمشق کی جامع مسجد اُموی میں مقامِ زکریا علیہ السلام پر غیب سے ظاہر ہونے والے ایک ابدال نے عطا کیا تھا۔ سیدنا امام جعفر صادق رضی اللہ عنہ سمیت بہت سے مشائخ و اولیاء سے بھی یہ منقول ہے۔ 11. درج ذیل درود شریف سو (100) مرتبہ پڑھیں: اَللّٰهُمَّ صَل

اپنا تبصرہ بھیجیں