وفاقی حکومت نے ملک بھر کے تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے ملک بھر کے تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا ہے کہ تعلیمی ادارے15 ستمبر سے کھولنے کافیصلہ کیا گیا ہے، این سی اوسی کوتعلیمی ادارےکھولنےسےمتعلق معاملات پرتجاویزبھیج دی ہیں،

ستمبر کے پہلے ہفتے میں دوبارہ صحت کے انڈیکیٹرز کو مد نظر رکھا جائیگا، تمام یونیورسٹیز طالب علموں کو ایس او پیز کے تحت پندرہ جولائی سے بلا سکتی ہیں تعلیمی اداروں میں ایس او پیز پر عمل درآمد سے متعلق ٹریننگ ہوگی ، فیصلہ ہوا ہے کہ مختلف تعلیمی اداروں کو انتظامی دفاتر پہلے کھولنے کی اجازت دی جائے، صحت کےمعاملات ٹھیک ہوجاتےہیں توپھر 15 ستمبر سےتعلیمی ادارے کھول دینگے، ستمبر کے پہلے ہفتے صحت کے معاملات سے متعلق مشاورت ہوگئی ، پی ایچ ڈی طلبہ کو کیسے اور کب بلانا ہے اس کا فیصلہ یونیورسٹی کرے گی ،یونیورسٹیوں میں بھی تجویز ہے کہ عید سے پہلے یا بعد پی ایچ ڈی طلبہ کو محدود تعداد میں بلالیں۔ دوسری جانب گزشتہ روز پنجاب کے وزیر تعلیم مراد راس کا کہنا تھا کہ جب تک طلباء اور اساتذہ کورونا وائرس سے محفوظ نہیں ہو جاتے لاک ڈاؤن ختم کرنے کا نہیں سوچا جا سکتا، کانفرنس میں صرف اس چیز پر غور کیا گیا کہ سکولنے کھولنے میں کونسے مسائل در پیش ہیں، سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب نے سکول کھولنے کے حوالے سے ایس او پیز پر کام مکمل کرکے ایس او پیز گائیڈ لائن بھجوا دی ہیں، تمام امور کا تفصیلی طور پر جائزہ لیا گیا تاہم حتمی فیصلے کا اعلان چند دنوں میں کیا جائے گا گا۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حالات میں تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ سنگین ہے، کسی بھی قسم کے دباؤ میں نہیں آسکتے، طلبا اور اساتذہ کا تحفظ ہماری اولین ترجیح ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں