وزیراعظم عمران خان کا کشمیریوں کے حوالے سے اہم اعلان

بوسنیا میں قتل عام کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان کا پیغام سامنے آیا ہے

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھی بوسنیا کی طرح قتل عام کا خدشہ ہے، آج بھی سربرینکا میں قتل عام صدمے کا باعث ہے صدمہ ہے عالمی برادری نے کس طرح اس قتل عام کی اجازت دی,سربرینکا اقوام متحدہ کی امن فوج کی محفوظ جنت تھا

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ آٹھ لاکھ بھارتی فوج نے 80 لاکھ کشمیریوں کو یر غمال بنایا ہواہے،آج کشمیری عوام کو مشکلات کا سامنا ہے ,عالمی برادری یقینی بنائے آئندہ ایسے واقعات نہ ہوں,ضروری ہے کہ ہم اس واقعے سے سبق سیکھیں

وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ برس 15 اگست کو بھی ایک ٹویٹ کی تھی جس میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ کیا دنیا خاموشی سے مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی اور سربرینیکا جیسے ایک اور قتل عام کا نظارہ کرے گی؟میں اقوام عالم کو متنبہہ کرتا ہوں کہ اگر اسکی اجازت دی گئی تو مسلم دنیا سے شدید ردعمل اور سنگین نتائج برآمد ہوں گے، انتہاء پسندی کو ہوا ملے گی اور تشدد کا نیا دور ابھرے گا۔

واضح رہے کہ 11 جولائی 1995 کو سرب فوجیوں نے بوسنیا ہرزیگووینا کے سربرینیکا نامی قصبے پر قبضہ کیا۔ چند دنوں کے اندرسرب فورسز نے8ہزار سے زائد بوسنیائی مسلمانوں کو بیدردی سےقتل کر ڈالا۔ اس قتل عام کے ذمہ داروں میں سرب فورسز کے علاوہ ڈچ و یو این فورسز اور نیٹو فضائیہ شامل ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں